Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 18  ستمبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

نریندر مودی اورنیتن یاہو میں قدر مشترک

قومی نیوز منگل 20  اگست 2019
نریندر مودی اورنیتن یاہو میں قدر مشترک

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت کے نریندر مودی اور اسرائیل کے نتن یاہو کے درمیان ایک قدر مشترک ہے اور وہ ہے مسلم دشمنی، دونوں رہنما نسل پرست اور فاشسٹ پالیسیوں پر عمل پیرا ہیں اور گزشتہ چند سال سے دونوں کے درمیان دوستی بھی عروج پر ہے۔

ان کے درمیان آ پس میں اربوں ڈالر کے معاہدے بھی ہوچکے ہیں۔ نتن یاتو نے اگر غزہ کو ایک کھلی جیل بنا رکھا ہے تو مودی نے وادی کشمیر کو بھی ایک کھلی جیل میں تبدیل کردیا ہے، وہاں پر سات لاکھ افواج قابو نہ پاسکی تھی چنانچہ مزید دستے بھجوا دیے گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : کشمیر پر خاموش ملالہ ہولی،دیوالی تومناتی رہی

اسرائیل نے جس طرح فلسطین میں مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں بدلا، بھارت بالکل اس کے نقش قدم پر چلتے ہوئے وادی کے علاقے میں مسلمانوں کی اکثریت کو اقلیت میں بدلنے کے منصوبے پر عمل کررہا ہے۔ آ رٹیکل370کے ختم کرنے میں یہاں لاکھوں، کروڑوں کی تعداد میں غیر مسلم کو آ باد کرنے کا منصوبہ ہے

جب یہاں غیر مسلم اکثریت حاصل کرلیں گے تو پھر یہاں پر وہ استصواب رائے پر بھی راضی ہوجائے گا۔ 70سال کے ظلم و تشدد کے باوجود بھارت مقبوضہ کشمیر میں وہاں کے عوام کو دبانے میں مکمل طور پر ناکام رہا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : مقبوضہ کشمیر، مزید سوا لاکھ بھارتی فوجی تعینات

خصوصاً2016ءمیں برہان وانی کی شہادت کے بعد جس طرح تحریک آ زادی نے زور پکڑا اس سے بھارتی حکمرانوں کو یقین ہوگیا کہ کشمیری کبھی بھی اس کے ساتھ رہنے کورضامند نہ ہوں گے چنانچہ ہندوتوا کے تین بڑے رہنماﺅں نریندر مودی، امیت شاہ اور اجیت اروال نے نہ صرف اقوام متحدہ کی قراردادوں، بین الاقوامی بلکہ خود اپنے ہی آ ئین اور پاکستان کے ساتھ کشمیر پر شملہ اور لاہور معاہدے کی دھجیاں اڑا دی ہیں۔

(941 بار دیکھا گیا)

تبصرے