Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 21  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

وزیراعظم سندھ حکومت سے جواب طلب کریں، کنور نوید جمیل

ویب ڈیسک جمعرات 01  اگست 2019
وزیراعظم سندھ حکومت سے جواب طلب کریں، کنور نوید جمیل

کراچی…ایم کیو ایم پاکستان کے سینئرڈپٹی کنوینرعامرخان نے کہاہے کہ صوبہ سندھ میں18ویںترمیم کاغلط استعمال کرکے اختیارات سلب کیے جارہے ہیں اس لئے ہم یہ مطالبہ کرتے ہوئے ہیںکہ18ویںترمیم پردوبارہ غورکرتے ہوئے ایک نئی ترمیم لائی جائے جس میںبلدیاتی اداروںکومکمل اختیارات حاصل ہوں۔

انہوںنے کہاکہ کراچی شہرکی اونرشپ لینے کوکوئی تیارنہیںہم نے بارشوںکے موقع پررابطہ کمیٹی ،منتخب وبلدیاتی نمائندگان،ذمہ داران اور کارکنان نے بارش کے پانی میںاترکراس کی نکاسی کویقینی بنایااورندی نالوںسے نہ صرف کچرانکالابلکہ پانی کی نکاسی یقینی بنایا۔

انہوںنے یہ بات بہادرآبادمیںقائم ایم کیوایم پاکستان کے عارضی مرکزمیںپریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔اس موقع پرڈپٹی کنوینرکنورنویدجمیل،رکن رابطہ کمیٹی فیصل سبزواری نے بھی پریس کانفرنس سے خطاب کیاجبکہ ایم کیوایم پاکستان کی رابطہ کمیٹی کے اراکین عبدالوسیم،عبدالقادرخانزادہ اورزاہدمنصوری بھی موجودتھے۔

ڈپٹی کنوینرکنورنویدجمیل نے کہاکہ ایم کیوایم پاکستان حکومت سندھ کے منفی روئیے اورکے الیکٹرک کے غیرذمہ دارانہ عمل کی وجہ سے کرنٹ لگنے اورڈوب جانے سے جاںبحق ہونیوالے 22 افرادکے لواحقین سے گہرے دکھ کااظہارکرتی ہے اوریہ اعلان کرتی ہے کہ وہ جاںبحق ہونیو الے افرادکے لواحقین فوری طورپرعدالتوںسے رجوع کریں ایم کیو ایم پاکستان انہیںہرقسم کی قانونی مددفراہم کریگی ۔

یہ بھی پڑھیں : متحدہ ،پی ٹی آئی اتحاد خطرے میں پڑگیا

انہوںنے کہاکہ صوبے کو95فیصدٹیکس دینے والے شہرکراچی کے ساتھ سندھ حکومت کا سلوک مفتوحہ علاقے جیساہے۔کراچی کے ساتھ ساتھ حیدرآبادجہاں128ملی میٹربارش ہوئی کسی قسم کی مددکی گئی نہ ہی بارش سے نمٹنے کے لئے بلدیاتی اداروں کوکسی قسم کے فنڈز جاری کیے گئے ۔

کنورنویدجمیل نے کہاکہ شہری سندھ بالخصوص کراچی کے وسائل پرسندھ حکومت کاقبضہ ہے تمام شہری اداروںپرحکومت سندھ کا کنٹرول ہے حال ہی میں جون کے بجٹ میںحکومت سندھ نے یہ تسلیم کیاکہ کراچی سے 240ارب روپے ٹیکس وصول کیاگیاتوپھرکراچی شہرکوبجٹ میںصرف 22 ارب روپے رکھ کرکیا ثابت کیاجارہاہے،ہم وزیراعظم پاکستان عمران خان سے درخواست کرتے ہیںکہ جس طرح کراچی کوبربادکیاجارہاہے دستور پاکستان کے سیکشن149جوانہیں اختیاردیتاہے کہ وہ صوبے سے وسائل کے غلط استعمال کے بارے میںجواب طلب کریںاوران کامکمل احتساب کیاجائے۔

کنورنویدجمیل نے کہاکہ جب تک سارے محکمے ایک چھتری مئیرکراچی کے ماتحت نہیںہونگے کراچی میںترقی کاتصورنہیں کیاجاسکتا۔کنورنویدنے کہاکہ سندھ حکومت کراچی بربادکررہی ہے اس کا صاف مطلب ہے کہ سندھ حکومت ملک بربادکررہی ہے کیونکہ کراچی ملک کامعاشی حب ہے۔

رکن رابطہ کمیٹی فیصل سبزواری نے کہاکہ صوبائی مالیاتی کمیشن ؍ایواڈکی مدمیں843ارب روپے دیئے گئے لیکن افسوس کے ساتھ کہناپڑتاہے کہ حکومت سندھ نے صرف اور صرف 22ارب روپے کاکراچی کیلئے اعلان کیاگیا۔

فیصل سبزواری نے کہاکہ کچرااٹھانے سے لیکرہراہم محکمہ حکومت سندھ نے اپنے ماتحت رکھاہواہے اورسولڈ ویسٹ ڈیپارٹمنٹ کچرااٹھانے کے بجائے نالوںمیںپھینکتارہا،سیوریج اورندی نالوںپرآبادیاںبنادی گئی جنہیں حکومت سندھ نے لیزدی ہیں،ڈیمز پر کٹ لگاکرعلاقوںکوڈوبونے کاانتظام کیاگیا جس کی ایک مثال سعدی ٹائون ہے ۔

فیصل سبزواری نے کہاکہ کے الیکٹرک کی نااہلی کوباربارلکھنا یاکہنا بھی اب فضول ہے اس نااہل ادارے کے الیکٹرک کوہلاک ہونے والے افرادکے لواحقین کوفوری معاوضہ ادا کرناچاہئے ۔فیصل سبزواری نے عدالتوںسے درخواست کی کے توڑنے کے احکامات بہت دیئے جاچکے اب شہربچانے کے احکامات جاری کیے جائیں۔

انہوں نے کہاکہ سابق چیف جسٹس افتخارچوہدری نے یہ کہاتھاکہ کراچی کے مئیرکوتمام اختیارات دیئے جائیںہم اب مطالبہ کرتے ہیںکہ دس سال پہلے جس طرح کراچی کی شہری حکومت کواکٹرائے ضلع ٹیکس کی مدمیں43ارب روپے ترقیاتی بجٹ کے لئے دیئے گئے تھے وہی شیئربحال کیاجائے جوبلدیاتی اداروںسے مسلسل کٹوتی کیاجارہا ہے۔فیصل سبزواری نے کہاکہ کراچی صبرکررہاہے پیپلزپارٹی جوشہرپراحسان کررہی ہے وہ کراچی کاحق ہے اورحق دیاجاتاہے احسان نہیں دیاجاتا۔

(477 بار دیکھا گیا)

تبصرے