Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
جمعه 06 دسمبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

مسلم رائیڈر، بھارتی ہندو کا آرڈر لینے سے انکار

قومی نیوز جمعرات 01  اگست 2019
مسلم رائیڈر، بھارتی ہندو کا آرڈر لینے  سے انکار

ممبئی …بھارت میں ہندو نوجوان نے کھانا گھر پہنچانے کا آ رڈر وصول کرنے سے صرف اس لیے منع کردیا کیوں کہ اس کا آرڈر ایک مسلم رائیڈر لے کر آیا تھا۔بھارت میں نامو سرکار نامی ٹوئٹر صارف نے ٹوئٹ کیا کہ میں نے گھر کھانا پہنچانے والی آن لائن کمپنی ‘زوماٹو’ کو دیا گیا آ رڈر اس وجہ سے منسوخ کردیا کیوں کہ ان کا ڈلیوری بوائے ہندو مذہب سے تعلق نہیں رکھتا تھا۔

نامو سرکار نے مزید کہا کہ جب اسے معلوم ہوا کہ اس کے آرڈر کو ڈلیور کرنے کیلئے فیاض نامی رائیڈر کو بھیجا جارہا ہے تو اس نے کمپنی سے دوسرے رائیڈر کو بھیجنے کا کہا لیکن اعتراض کے باوجود زوماٹو کمپنی نے ڈلیوری کرنے والے کو تبدیل نہیں کیا اور ساتھ ہی پیسے واپس کرنے سے بھی انکار کیا۔

یہ بھی پڑھیں : گٹر بند کرنیکا ’’عادی مجرم‘‘ گرفتار

ٹوئٹر صارف نے کمپنی کے ساتھ ہونے والی بات چیت کے اسکرین شارٹ بھی پوسٹ کیے جس میں اس نے کھانا ڈلیور کرنے والے مسلمان رائیڈر کو بھیجنے سے منع کیا۔اس ٹوئٹ کے جواب میں کھانا پہنچانے والی کمپنی زوماٹو انڈیا نے اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ ’کھانے کا کوئی مذہب نہیں ہوتا‘۔

بھارتی کمپنی کی اس ٹوئٹ کے بعد سوشل میڈیا پر زوردار بحث کا آ غاز ہوگیا ہے اور کئی لوگوں کی جانب سے کھانا پہنچانے والی کمپنی کے مؤقف کی حمایت کی گئی ہے۔ٹوئٹر صارفین کی جانب سے زوماٹو کمپنی کے ردعمل کو بے حد سراہا جارہا ہے اور اب تک اسے تقریباً 70 ہزار افراد نے لائک جبکہ 23 ہزار مرتبہ ری ٹوئٹ کیا گیا ہے۔

(674 بار دیکھا گیا)

تبصرے