Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
اتوار 18  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

نمکین پانی سے بجلی پیدا کرنے کا تجربہ

ویب ڈیسک بدھ 31 جولائی 2019
نمکین پانی سے بجلی پیدا کرنے کا تجربہ

کراچی … ماہرین نے زنگ آ لود سطح کی باریک پرت پر نمکین پانی گزار کر بجلی پیدا کرنے کا کامیاب تجربہ کیا ہے۔ اس دلچسپ تحقیق کے نتائج ظاہر کرتے ہیں کہ اس نئے طریقے میں ماحول دوست اور متبادل ذرائع سے بجلی حاصل کرنے کی صلاحیت موجود ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، دھاتی مرکبات اور نمکین پانی میں بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت ہے، عمومی طور پر یہ اْس کیمیائی عمل کا نتیجہ ہے جو ایک مرکب کو کسی دوسرے نئے مرکب میں تبدیل کر دیتا ہے۔

کالٹیک اور نارتھ ویسٹرن یونیورسٹی کے ماہرین کا کہنا ہے کہ زنگ (جسے کیمیائی زبان میں آ ئرن آ کسائیڈ کہا جاتا ہے) بہتے ہوئے نمکین پانی کی حرکی توانائی کو بجلی میں تبدیل کر دیتا ہے۔ کالٹیک کے پروفیسر ٹام ملر کا کہنا ہے کہ اسی طرح کا مظہر دوسرے مٹیریل میں بھی دیکھا جا سکتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عمران بااختیار وزیراعظم ہیں، امریکی ماہرین

آ پ نمکین پانی کا قطرہ لیں اور اسے گریفین کی سطح پر گرائیں اور دیکھیں کہ کیسے ہلکی بجلی پیدا ہوتی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ گریفین فلم کی نقل بنانا بہت مشکل ہے لیکن آ ئرن آ کسائیڈ با آ سانی حاصل کیا جا سکتا ہے کیونکہ یہ لوہے پر جمع ہونے والی سطح ہے جسے بڑے پیمانے پر اور وسیع رقبے پر تیار کیا جا سکتا ہے۔

جب نمکین پانی زنگ آ لود سطح پر سے گزرے گا تو پانی میں موجود آ ئنز (الیکٹرانز کے حصول یا اخراج کی و جہ سے مثبت یا منفی بار رکھنے والے مالیکیولز) زنگ کے نیچے موجود لوہے کے الیکٹرانز کو اپنی جانب کھینچتا ہے اور اْن الیکٹرانز کو اپنی جانب گھسیٹتا ہے جس سے الیکٹرک کرنٹ پیدا ہوتا ہے۔

مستقبل میں اس عمل کو سمندروں میں نصب پیپے (BUOY) کے ذریعے توانائی پیدا کرنے کیلئے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

(110 بار دیکھا گیا)

تبصرے