Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 21  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

بھارت میں بھی سیاست دان جیل نہیں جاتے

ویب ڈیسک پیر 29 جولائی 2019
بھارت میں بھی سیاست دان جیل نہیں جاتے

لاہور….. سیاسی لیڈروں کاجیل میں جانے کے بعد بیمار ہوکر اسپتال جانے کا رواج صرف پاکستان میں ہی نہیں بلکہ دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت ہونے کا دعویٰ کرنے والے ملک بھارت میں بھی سیاست دان اپنی سزائیں جیل کی بجائے اسپتال میں گزارنا پسند کرتے ہیں۔

بھارت کے سابق وزیر ریلویز ریاست بہار کے سابق وزیراعلیٰ اور راشٹریہ جنتادل کے سربراہ لالو پرشاد یادیو، جنہیں 23 دسمبر 2017ء کو تین مختلف کیسوں میں سزا ملنے کے بعد جیل بھیج دیا گیا تھا اب تک 19ماہ میں 17سے ماہ کی سزا انہوں نے اسپتال میں گزاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستان اور سری لنکا کو ایک ایک پوائنٹ مل گیا

وہ سزا ملنے کے دو ماہ بعد ہی بیمار ہو گئے تھے اور اب تک ان کی بیماری دور نہیں ہو سکی۔انہیں مئی 2018میں ڈاکٹروں نے فٹ قرار دے دیتے ہوئے واپس جیل منتقل کر دیا تھا لیکن چند روز بعد ہی انہیں بیٹے کی شادی میں شرکت کے لئے پیرول پر رہا کردیا گیا۔

اپنی رہائی کے دوران انہوں نے ہائی کورٹ سے دوبارہ علاج کے لئے ضمانت پر رہا کر دیا اور انہیں ممبئی کے اسپتال میں منتقل کر دیا گیا۔کچھ عرصہ بعد29اگست 2018 کو انہیں مقامی پرائیویٹ اسپتال میں منتقل کر دیا گیا جہاں وہ اب تک زیر علاج ہیں۔

(640 بار دیکھا گیا)

تبصرے