Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 20  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

بلاول حکومت کے حامی، مریم ناراض

ویب ڈیسک بدھ 24 جولائی 2019
بلاول حکومت کے حامی، مریم ناراض

کراچی، اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے وزیر اعظم عمران خان کے دورہ امریکہ کی کاوشوں کی غیر مشروط حمایت کا اعلان کردیا۔

بلاول بھٹو نے اپنی ٹویٹ میں کہا انہیں اپنے وزیر اعظم، ان کی غیر جمہوری سیاست اور مہلک معاشی پالیسیوں پر کئی تحفظات ہیں تاہم وہ یہ کہنا چاہیں گے کہ ملک کے وسیع قومی مفاد میں ہر کسی کو عالمی سطح پر پاکستان کی کوششوں کو سراہنا چاہیے ، اسی لئے وہ اس سلسلے میں حکومتی اقدامات کی غیر مشروط طور پر حمایت کرتے ہیں، ملکی مفاد کے لئے پاکستان سے جڑی کاوشوں کو سپورٹ کرنا چاہئے ، جب ضرورت ہوئی ہمیشہ تعمیری تنقید کرتا رہوں گا، ہمارے لئے سب سے پہلے پاکستان ہے۔

ادھر بلاول کے ٹویٹ پر مریم نواز ناراض ہوگئیں، پیپلزپارٹی کے اہم رہنمائوں کومریم کی ناراضی سے آگاہ کر دیا گیا۔ بلاول بھٹو کی طرف سے دورہ امریکہ کے موقع پر عمران خان کی غیر مشروط حمایت کے ٹویٹ پر مریم نواز سمیت ن لیگ کے کئی رہنمائوں نے نہ صرف ناراضی کا اظہار کیا بلکہ اسے اپوزیشن کے اندر دراڑ ڈالنے کا باعث بھی قرار دیا ہے۔

مصدقہ ذرائع کا کہنا ہے بلاول بھٹو کی طرف سے ان کے عمران خان کے حوالے سے ٹویٹ کے بعد ن لیگ کے چند اہم رہنمائوں نے پیپلز پارٹی کے بلاول بھٹو کے قریبی ساتھیوں کو پیغام دیا ہے کہ بلاول بھٹو کو اس موقع پر یہ ٹویٹ نہیں کرنا چاہئے تھا۔ اس ٹویٹ کی وجہ سے اپوزیشن کے اندر دراڑیں پڑ سکتی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : بلاول نے ایم کیو ایم کامینڈیٹ تسلیم کرلیا

ہم میں سے اگر کوئی عمران خان کے اس دورہ کے حوالے سے تعریف اور حمایت کرتا ہے تو اس سے حکومت کو تقویت اور اپوزیشن کو نقصان پہنچتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے ایک اہم لیگی رہنما نے تو پیپلزپارٹی کی ایک اہم شخصیت کو یہاں تک کہہ دیا کہ کہیں آپ لوگوں کے معاملات تو طے نہیں ہو گئے اور بلاول کہیں اسی لئے امریکہ تو نہیں گیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے پیپلزپارٹی کی طرف سے ن لیگی رہنمائوں کو کہہ دیا گیا کہ وہ بلاوجہ اور بلا مقصد تنقید کسی صورت برداشت نہیں کریں گے۔ حکومت نے جو غلط کام کیے ان کیخلاف ن لیگ سے زیادہ پیپلزپارٹی نے ا سٹینڈ لیا اورپیپلزپارٹی نہیں مگر ن لیگ ڈیل کر سکتی ہے۔

ذرائع نے اس بات کی تصدیق کی کہ مولانا فضل الرحمان بھی اس معاملے پر بلاول بھٹو سے ناراض ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے اس ساری صورتحال میں آصف علی زرداری کی ہدایت پر پیپلزپارٹی کے چند اہم رہنما متحرک ہوئے اور انہوں نے ن لیگ اور مولانا فضل الرحمان کو یقین دہانی کرائی کہ وہ اس معاملے پر حکومت کیخلاف اپوزیشن کیساتھ کھڑے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے 25 جولائی کے یوم سیاہ اور چیئرمین سینٹ کیخلاف تحریک عدم اعتماد کے بعد اپوزیشن کے اختلافات کم ہونے کی بجائے زیادہ ہوتے نظر آرہے ہیں اور اسی وجہ سے بڑا اپوزیشن اتحاد بھی ٹوٹ سکتا ہے۔

(274 بار دیکھا گیا)

تبصرے