Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 19  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

آئس نشے کی تیاری میں ایکسپائر ادویات کا استعمال

ویب ڈیسک بدھ 03 جولائی 2019
آئس نشے کی تیاری میں ایکسپائر ادویات کا استعمال

کراچی… نوجوان طبقے میں تیزی سے مقبول ہونے والے’’ آئس ‘‘نشے کی تیاری میں زائد المیعاد ادویات کا چور ا استعمال کئے جانے کا انکشاف ہواہے‘ ذرائع کے مطابق پیر اسیٹا مول ‘ پینا ڈول وکس اور نزلہ وزکام کیلئے استعمال ہونے والی کئی دیگر ایکسپائرڈ ادویات کا چورااس نیٹ ورک میں شامل منشیات فروش مختلف ذرائع سے جمع کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : ہنگامہ آرائی طے شدہ بھارتی سازش نکلی

جس کیلئے ان کا بعض ادویہ ساز کمپنیوں اور تھوک مارکیٹوں سے رابطہ ہے‘ یہ چورا کوئٹہ بھیجا جاتاہے ‘ جہاں افغان اسمگلر ان ادویات کے عوض کرسٹل میتھو یعنی آرٹس نامی نشہ فراہم کرتے ہیں‘ ذرائع کے مطابق افغان اسمگلرز ایکسپائرڈ ادویات کے بعد سے اینیڈرین اور دیکسٹرو میتھو رفان کشید کرلیتے ہیں‘ ذرائع کا دعویٰ ہے کہ یہ چورا مرغیوں ‘ مچھلیوں‘ گائے ‘ بھینسو ں کی فیڈ میں بھی استعمال کیا جارہا ہے‘ ذرائع کے مطابق آئس کیونکہ کسی پودے سے تیار نہیں کی جارہی ہے

اس لئے اس کی تیاری آسان اور کم وقت میںممکن ہے‘ اسی لئے اس کی ترسیل میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے‘ ڈاکٹرز کے مطابق یہ نیا نشہ ہیروئن اور کوکین سے بھی زیادہ خطرناک ہے‘ متواتر استعمال سے اکثر افراد پاگل پن کا شکار ہوجاتے ہیں‘ ابتداء میں اس کے استعمال نے جسم میں کئی گنا توانائی کا احساس ہوتا ہے‘ مگر اس کے نقصانات قابل تلافی ہوتے ہیں۔

(245 بار دیکھا گیا)

تبصرے