Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 16  ستمبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

بے نامی ایکٹ کے تحت کارروائیاں شروع

ویب ڈیسک بدھ 03 جولائی 2019
بے نامی ایکٹ کے تحت کارروائیاں شروع

کراچی … بے نامی ایکٹ کے تحت ایف بی آر حکام نے پہلی کارروائی میں کراچی میں اربوں روپے کی منقولہ اور غیر منقولہ جائیداد منجمد کردی جسے بحق سرکار ضبط کرلیا جائے گا‘ یہ کارروائی پی پی قائد آصف علی زرداری کے جعلی اکائونٹس سے جڑے اومنی گروپ کے خلاف کی گئی ہے جس میں اربوں روپے کے منقولہ و غیر منقولہ اثاثے تحویل میں لے لئے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ بے نامی وہ اثاثے کہلاتے ہیں جو کالا دھن چھپانے کے لئے دوسروں کے نام سے بنائے جاتے ہیں۔ اس حوالے سے تفصیلات ایک وفاقی وزیر کی طرف سے سامنے آئی ہیں جن بے نامی اثاثوں کے خلاف کارروائی کی گئی ہے ان میں اومنی گروپ کا پلاٹ نمبر 18/2 سول لائن کراچی شامل ہے جو پلازہ انٹر پرائز پرائیویٹ لمیٹڈ کے نام پر بنایا گیا تھا‘ اس کی مالیت کا فوری طور پر تعین نہیں کیا گیا لیکن یہ کروڑوں روپے کا بتایا جاتا ہے۔

اسی طرح سول لائن کراچی میں ہی پلاٹ نمبر 216 ایل بھی اومنی گروپ کا بے نامی اثاثہ تھا جو مارشل ہومز بلڈرز کے نام پر بنایا گیا تھا‘ اس کی مالیت 24 کروڑ 69 لاکھ سے زائد ہے۔ کلفٹن بلاک 5 میں پلاٹ نمبر 122 ندیم احمد خان کے نام پر بنایا گیا تھا‘ اومنی گروپ کے سوا 2 ارب سے زائد کے بے نامی شیئرز بھی پکڑے گئے۔

یہ بھی پڑھیں : ٹینکرز مافیا کو پانی کون فراہم کررہا ہے؟شہری حیران

ٹھٹھہ سیمنٹ کمپنی کے 2 کروڑ 64 لاکھ ‘ 335 شیئرز اومنی گروپ نے المفتاح ہولڈنگ لمیٹڈ کے نام سے رکھے ہوئے تھے‘ ان کی مالیت 53 کروڑ‘ 49 لاکھ روپے سے زائد ہے۔ ٹھٹھہ سیمنٹ کے 87 کروڑ 14 لاکھ مالیت کے 2 کروڑ 15 لاکھ سے زائد شیئرز اسکائی پاک ہولڈنگ کے نام سے چلائے جارہے تھے۔

ٹھٹھہ سیمنٹ کے ہی ساڑھے 26 کروڑ سے زائد مالیت کے شیئرز رائزنگ اسٹار ہولڈنگ کمپنی پرائیویٹ لمیٹڈ کے نام پر تھے۔ اومنی گروپ نے 60 کروڑ مالیت کے سمٹ بینک کے شیئرز بھی بے نامی رکھے ہوئے تھے۔

سیرا کام اسٹاک اینڈ کیپٹل پرائیویٹ لمیٹڈ اور پارک ویو اسٹاک اینڈ کیپٹل پرائیویٹ لمیٹڈ کے نام پر سمٹ بینک کے 33 کروڑ شیئرز حاصل کئے گئے تھے۔

(1853 بار دیکھا گیا)

تبصرے