Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 16  ستمبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار،سی این جی مہنگی

ویب ڈیسک پیر 01 جولائی 2019
پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار،سی این جی مہنگی

اسلام آ باد…گھریلو،کمرشل صارفین اور سی این جی سیکٹر کیلئے گیس مہنگی، اطلاق آ ج سے ہوگا، نوٹیفکیشن جاری کردیاگیا، ماہانہ 100مکعب میٹر گیس استعمال کرنیوالے گھریلو صارفین کیلئے قیمت 127سے بڑھا کر300روپے ہوگئی، سی این جی کی قیمت میں بھی 22روپے فی کلوتک اضافہ ہوگیاہے۔

تفصیلات کے مطابق آ ئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے (آ ج)یکم جولائی سے گیس کی قیمتوں میں اضافے کا نوٹی فکیشن جاری کردیا، ماہانہ 50 مکعب میٹر گیس استعمال کرنے والے گھریلو صارفین کے لیے گیس کی قیمت 121 روپے برقرار رکھی گئی جب کہ ماہانہ 100 مکعب میٹر گیس کے استعمال پر گیس کی قیمت 127 روپے سے بڑھا کر 300 روپے کردی گئی ہے۔

نوٹی فکیشن کے مطابق ماہانہ 200 مکعب میٹر گیس استعمال کرنے والوں کے لیے گیس کی قیمت 264 روپے سے بڑھا کر 553 روپے جب کہ ماہانہ 300 مکعب میٹر گیس استعمال کرنے والوں کیلئے 275 روپے سے بڑھا کر 738 روپے کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پٹرول مہنگا کرنیکی تجویز، وزیراعظم کا امتحان

اسی طرح ماہانہ 400 مکعب میٹر گیس استعمال کرنے والوں کیلئے گیس کی قیمت 780 روپے سے بڑھا کر 1107 روپے، ماہانہ 400مکعب میٹر گیس سے زائد گیس استعمال پر گیس کی قیمت 1460 روپے برقرار رکھی گئی ہے۔

نوٹی فکیشن کے مطابق کھاد کارخانوں کے لیے بطور فیڈ گیس کی قیمت میں 61 فیصد جب کہ بجلی کارخانوں، سی این جی اور جنرل انڈسٹری کیلئے تمام شعبوں میں گیس کی قیمت 31 فیصد بڑھائی گئی۔دوسری جانب یکم جولائی سے سی این جی مہنگی کرنے کا بھی نوٹی فکیشن جاری کردیا گیاہے جس کا اطلاق بھی یکم جولائی سے ہوگا۔

ادھروفاقی حکومت نے ماہ جولائی کیلئے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو موجودہ سطح پر برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ سیلزٹیکس کی شرح بڑھادی گئی، وزارت خزانہ کے مطابق عوام کو ریلیف کی فراہمی کیلئے فیصلہ کیا گیا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کو ماہ جون کی قیمتوں کی سطح پر برقرار رکھا جائے گا

پیٹرول کی قیمت112روپے 68پیسے فی لٹر، ڈیزل کی قیمت 126روپے 82پیسے فی لٹر ، مٹی کے تیل کی قیمت 98روپے46پیسے فی لٹر اور لائٹ ڈیزل آ ئل کی قیمت 88روپے 62پیسے فی لٹر برقرار رکھی گئی ہے، ایف بی آ ر نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوںمیں اضافہ نہ ہونے کے تناظر میں سیلز ٹیکس میں ردو بدل کر دیا ہے اور پیٹرول پر سیلز ٹیکس کی شرح 13فیصد سے بڑھا کر 17فیصد ، ڈیزل ( ہائی سپیڈ ) پر سیلزٹیکس کی شرح 13فیصد سے بڑھا کر 17فیصد کر دی گئی ، مٹی کے تیل پر سیلز ٹیکس 17فیصد ، لائٹ ڈیز ل آ ئل پر سیلز ٹیکس 17فیصد کو برقرار رکھا گیا ہے۔

(1876 بار دیکھا گیا)

تبصرے