Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 25 مئی 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

کراچی کے میگا ترقیاتی منصوبے ٹھپ

ویب ڈیسک بدھ 15 مئی 2019
کراچی کے میگا ترقیاتی منصوبے ٹھپ

کراچی … حکومت سندھ کی جانب سے کراچی میں شروع کیے گئے میگا پروجیکٹس فنڈ کی کمی اور ناقص منصوبہ بندی کے باعث تاخیر کا شکار ہو گئے ہیں جن کے باعث عوم کو شدید مشکلات کا سامنا ہے اور شہر میں ٹریفک جام سمیت دیگر مسائل پیش آرہے ہیں۔

دوسری طرف سندھ حکومت کی جانب سے فنڈز کی کمی کو پروجیکٹس کی تکمیل میں تاخیر کا جواز بتا یا جارہا ہے ْ۔کورنگی ڈھائی اور پانچ نمبر فلائی اوور کا کام 30فیصد ،شہید ملت انڈر پاسز کا کام 65فیصد ہی مکمل ہوسکا، کہیں فنڈز منجمدکہیں رک گئے۔

کورنگی نمبر ڈھائی اور پانچ نمبر فلائی اوور ،شاہراہ دارالعلوم (8ہزار روڈ)، شہید ملت روڈ پر حیدر علی سگنل اور طارق روڈ سگنل پر انڈر پاسز اور لی مارکیٹ کے اطراف گلیوں کی تعمیر کے منصوبے رواں سال فروری میں شروع کئے گئے تھے اور انہیں جون تک مکمل کرنے کا دعویٰ کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں : بلاول صاحبہ جاپان جرمنی کی سرحد پر بولی جانیوالی زبان

ذرائع نے بتایا کہ مجموعی طورپر 50فیصد کام مکمل ہو چکے ہیں، شہید ملت کے دونوں انڈر پاسز کا کام تقریباً 60سے65فیصد مکمل ہو چکاہے دونوں منصوبوں کی لاگت 30, 30کروڑ روپے ہے ،ان منصوبوں میں حکومت سندھ نے پہلے دوکوارٹرز کے جو فنڈز جار ی کئے تھے وہ استعمال ہو چکے ہیں

مزید فنڈ جاری نہیں کیا گیا،کورنگی میں8ہزار روڈ جو ایک ارب 20کروڑ روپے کی لاگت سے تعمیر کیا جا رہا ہے 65کروڑ روپے ریلیز کئے گئے تھے جبکہ لی مارکیٹ کی سڑکوں کیلئے 32کروڑ 50لاکھ ریلیز کیے گئے لیکن ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ دونوں فنڈ دوسر ی سہ ماہی میں استعمال نہ ہونے کے باعث اب منجمد کر دیئے گئے ہیں

دیگر میگا پروجیکٹس میں کورنگی نمبر ڈھائی اور پانچ نمبر فلائی اوور کیلئے بھی 25/25کروڑ روپے کے حساب سے فنڈ ریلیز ہوا ،ان دونوںمنصوبوں کا کام 25سے 30فیصد مکمل ہو سکا ہے ،اس طرح بعض منصوبوں کے فنڈ منجمد اور کچھ کا فنڈ رک جانے کے باعث مذکورہ منصوبے رواں مالی سال میں جون تک مکمل نہیں ہو سکیں گے۔ ذرائع کا کہنا ہیکہ ان میں کم از کم چھ ماہ کی تاخیر ہوجائے گی اور فنڈز نہ ملے کی صورتحال یہی رہی تویہ دسمبر تک مکمل ہو سکیں گے۔

(375 بار دیکھا گیا)

تبصرے