Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
جمعه 18 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

گلی محلوں میں شراب خانے کھل گئے

قومی نیوز جمعه 12 اپریل 2019
گلی محلوں میں شراب خانے کھل گئے

ملک کے کسی بھی کو نے میں اور کسی بھی شہر میں اتنی بڑی تعداد میں ( شراب خانے) مو جو د نہیں ہیں جتنے حیدر آباد میں شراب خا نے مو جو د ہیں‘ سندھ ہا ئی کو ر ٹ کے ا حکا مات پر گز شتہ سال شراب خا نو ں سے کھلے عام بغیر پر مٹ ر کھنے والے شہر یو ں بالخصوص مسلم نوجو ا نو ںکو شراب کی فر و خت کئے جانے کی شکایات پر شراب خا نو ں کو کئی رو ز تک بند کر دیا گیا تھا اور انتظا میہ کی جا نب سے حیدر آباد میں بھی تمام ہی شراب خا نے بند ا کر دیئے گئے تھے اورپھر شراب خا نو ںکی انتظا میہ کی جا نب سے شراب کی فروخت کے کھلے عام نہ کر نا اور بغیر پرمٹ ر کھنے والے غیر مسلمو ں کو بھی شراب کی فر و خت نہ کیے جانے کے تحر یر ی و حلفی بیا نا ت ا ور دیگر معا ملا ت پولیس انتظا میہ کے تحت کیے گئے تھے جس کے بعد حیدر آباد میں بھی دس کے قر یب شراب خا نو ںکو غیر مسلمو ں جن کے پا س پر مٹ ہو ا نہیں شراب کی فراہمی کی جا ئے اور یہ فر و خت کھلے عام ممنو عہ قر ار دی گئی تھی جس پر کچھ عر صے سے عملد ر آمد نہیں د کھائی دیتاہے اور پہلے پہل تو شراب خا نو ں۔کے با ہر پولیس اہلکا ر تعینا ت کیے جا تے تھے تاکہ کوئی بھی مسلم نو جو ان شراب خا نو ں کا ر خ کر نے کا سو چ بھی نہیں سکتے اور پو لیس اہلکا ر کو یکھ کر ہی شراب کی خر ید اری نہ کر سکے۔

لیکن ایسا اب شاہد ممکن نہیں ہے اور حیدر آباد میں ہا لا نا کہ رو ڈ پر قائم عرصہ در ا ز سے کھلے عام شراب کی فر و خت کی جا رہی ہے تو اسٹیشن رو ڈ پر وا قع حیدر آباد ر یلو ے ا سٹیشن کے قریب ہی پٹھان گل میں قائم شراب خا نے سے کھلے عام شراب کی فر وخت مسلم نوجوانو ں کوبھی کی جا رہی ہے اور تو اور کینٹ تھانے سے متصل کچھ ہی فاصلے پر کینٹ کے علا قے میں شراب کے سب سے بڑے مر کزی شراب خانے سے عر ف عام میں ( ڈاکٹر کا گتہ) ہونے کے الزامات کئی مر تبہ کئی ا خبا رات و جر ائد اور میڈیا کی نظر ہو چکے ہیں لیکن اس شراب خا نے کے خلاف کینٹ تھانے کی پولیس نے کبھی بھی کو ئی ایکشن ہی نہیں لیا ہے اور اسکی بڑی وجہ کینٹ تھا نے کے راشی پولیس افسران واہلکا رو ںکی آ شیر با د بتائی جاتی ہے‘ جبکہ بد نام زمانہ سیا سی و بعض با اثر شخصیات کی بھی مذ کو رہ شراب خانے کی انتظا میہ سے کمیشن یا پھر اس طرح کے معاملات بھی سب کے سامنے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : جلاد باپ

اس طر ح سٹی تھا نے کی ہی حد ود میں واقع ایک نجی بینک اور مقامی جا مع مسجد سے متصل ایک اور شراب خانہ مو جو دہے جہا ںسے کھلے عام شر اب کی خرید ا ری کر تے کھا ئی دیتے ہیں اور شراب خا نے کا جو فر و خت کر نے کے اوقات ہیں اسکے بعد گوشت گلی میں کھلے عام د گنے دامو ںشراب فر اہم کی جا تی ہے اور یہ کا ر وبار را ت گئے دیر تک جا ر ی ر ہتا ہے اب آ جا ئیے ٹا ور ما رکیٹ کے قریب معروف شر اب خا نہ جہا ں سے اند ور ن شہر اور اندورن سندھ جو آنے والے مسا فر اور شہر یو ں کو شر اب کی کھلے عام بغیر پرمٹ شر اب فرو خت کی جا ری ہے قا سم آ باد کے علاقے میں قائم شراب خا نے سے غیر مسلمو ں کی ٓا ڑ میں مسلم نو جو ا نو ںکو بھی شراب کی کھلے عام فر و خت کی جا رہی ہے حیر ت کی بات یہ ہے کہ یہ شراب خا نہ بھی پک اینڈ ڈرا پ کے حو الے سے شراب کی فروخت کرنے میں اپنا ایک مقام حا صل کیے ہو ئے ہیں اور یہ سب مقامی تھانید ا روں اور حد ود کے راشی پو لیس افسران واہلکا رو ں کی مد د سے جا ری و ساری تھا اس شراب خا نے کی پولیس جب کھل کر سامنے ا ٓئی کے جب ایڈیشنل آئی جی حیدر آ باد ریجن‘بھٹا ئی نگر کے علا قے میں اپنے دفتر کا چار ج سنبھا لتے ہی پولیس افسران کو منشیات اور منشیا ت فروشوں سے نمٹنے اور انکے خلا ف بھر پور کاروائیو ں کے ا حکا مات دیئے تھےجس پر حیدرآباد میں تھانہ بھٹائی نگرکی حد ود میں ایس ایچ او بھٹائی نگرمحمد شر یف کھو سو اور انچارج قاسم آباد سب انسپکٹر سکینہ بھٹی نے دو ران چیکنگ مخالف سمیت سے آنے والی کا رکو نمبر ANG-396کو ر کنے کا اشار ہ کیا اور کا رکو چیک کیا کا ر کی پچھلی نشست پر دس کا ر ٹن 235شراب کی بوتلیں برآمد کر کے منشیات فر وش کو گرفتار کر لیا گیا‘ پولیس کے مطابق گر فتار ملزم گلبہار داد حسین بخشی سکنہ فیز ٹو قا سم آ باد کو گرفتار کر لیااور گرفتار ملزم کے خلا ف کرائم نمبر53/2019 ز یر د فعہ 3/4پی ای ایچ او کے تحت مقدمہ درج کر لیا

پولیس نے قومی ا خبا ر میڈ یا کو بتایا کہ گر فتار منشیات فر و ش گلبہا ر شراب کی فر و خت کرنے والے بین الا صوبائی گر وہ کا ر کن ہے اور بڑے ڈیلر کے سا تھ کام کر نے میں ملو ث بتا یا گیا ہے۔جبکہ کئی شراب خا نو ں سے اب بھی شراب کی کھلے عام فر و خت کی جا ری ہے اور غیر مسلمو ں کی آ ڑ میں مسلم نو جو ا نو ںکو شراب کی بڑی کھیپ استعمال کرائی جا رہی ہے اکثر یت رات گئے دیر تک مختلف نامو ں سے بک کر ائے گئے ہو ٹلو ں او گیسٹ ہا ئو سز کے کمر و ںمیں داد عیش منانے میں معر و ف عمل ہیں ‘لیکن انتظامیہ کے بعض ایما ند ار پو لیس افسران واہلکا رو ںکی جانب سے کئی مر تبہ انکے خلا ف کا رر وائیا ں کی گئیں ہیں لیکن تھانے میں شراب کے ریسا ئو ں کے چالان کر نے سے قبل ہی تھا نید ا روں کو یا تو ملزما ن کو چھو ڑ نا پڑ تا ہے یا پھر تھا نہ چھو ڑ نا پڑ تا ہے اسی صو ر تحا ل کے پیش نظر حیدر آ باد میں یو میہ لا کھو ں روپے کی شراب ،شراب کے ر سیاہضم کر جاتے ہیں اور ماہا نہ راشی پو لیس افسران کو لا کھو ں کی بھتہ خو ری بھی بعض شراب خا نون کی انتظامیہ با قا عد گی سے کر ارہی ‘ بہرحال ریجن و ضلعی پو لیس انتظامیہ کی جانب سے منشیات فروشوں کے خلا ف کا رروائیا ں جا ری ہیں لیکن اس اثنا ء میں راشی پولیس افسران وسینئر پو لیس اہلکاروں کی جا نب سے رو اں سال میں بعض شراب خا نو ں کی انتظامیہ اور انکے کر تا د ھر تا افراد جو کہ کھلے عام شراب کی فر و خت کر نے میں مصرو ف عمل پا ئے جاتے ہیں ان شراب خا نو ںکی انتظا میہ اورملو ث پولیس کی کا لی بھیڑ و ں کے چہر و ں سے نقاب کیو ں نہیں ا تا را جا ر ہاہے جو کہ حیدر آ باد پو لیس کی بہتر کا ر کر د گی د کھا نے کے با و جود بھی سوالیہ؟؟؟ نشان ہے بہر حا ل ہم مسلمان ہیں ہمیں شراب نو شی اور شراب مسلمو ں کو ا ستعمال کر نے اور ان کی فراہمی کرنے والو ں کے خلا ف آوا ز حق بلند کر نے کی ضرور ت ہے پھر دیکھئے مسلم نو جو ان کسی بھی شراب خانے کے گردمنڈ لا تا نہیں دکھا ئی دے گا اس پر متعلقہ اداروں کی انتظا میہ کو صر ف سو چنے اور عملد ر آ مد کرانے کی ضرور ت ہے اور ہمارے مسلم حکمر ا نو ں کو بھی اس جانب تو جہ دینے کی ضر ور ت ہے۔

(234 بار دیکھا گیا)

تبصرے