Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 21  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

اسٹیل ملز کی بحالی کیلئے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کا فیصلہ

ویب ڈیسک بدھ 10 اپریل 2019
اسٹیل ملز کی بحالی کیلئے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کا فیصلہ

اسلام آباد … حکومت نے پاکستان اسٹیل ملز کی بحالی کے لیے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کا فیصلہ کر لیا ہے، پہلے مرحلے کے تحت آئندہ ڈیڑھ سال میں پاکستان اسٹیل ملز کے پلانٹ کو بحال کر کے 11لاکھ ٹن کی پیداواری صلاحیت حاصل کی جائیگی جبکہ دوسرے مرحلے میں اسٹیل ملز کی پیداوار کو 30لاکھ ٹن تک لے جایاجائیگا

ای سی سی نے پاکستان اسٹیل ملز کے لیے بنائی گئی کمیٹی کی سفارش پراس کی بحالی کے لیے پبلک پرائیویٹ پارٹرشپ کی اصولی منظوری دے دی ہے آئندہ ہفتے ای سی سی باقاعدہ منظوری دے گی ، وفاقی کابینہ کی حتمی منظوری کے بعد فنانشل ایڈوائز ر تعینات کیا جائیگا جس کے بعد ملکی و غیر ملکی کمپنیوں سے بڈنگ کا عمل شروع کر دیا جائیگا

یہ بھی پڑھیں : نواز شریف کا علاج کہاں ہونا ہے‘ طے نہیں

وزیر اعظم کے مشیر امورتجارت ، صنعت وپیداوارو سرمایہ کاری عبدالرزاق دائود نے منگل کو صحافیوں سے خصوصی گفتگو میں بتایا کہ شفاف عمل کے ذریعے نجی کمپنی کے ساتھ پارٹنرشپ کی جائیگی، چین اور روس کی تین تین کمپنیاں دلچسپی رکھتی ہیں،بحال کرنے کے لیے ہمارے پاس پیسے نہیں، اسٹیل ملز کے بقایاجات دو ارب 20کروڑ روپے ہیں

عبدالرزاق دائود نے بتایا کہ جون 2015میں پاکستان اسٹیل ملز کو مکمل بند کر دیا گیاتھا ، کمیٹی نے تفصیلی رپورٹ میں سفارش کی کہ ملز کو اسکریپ نہ کیا جائے ، حکومت اکیلے نہیں چلاسکتی اور اس کی نجکاری بھی نہ کی جائے بلکہ اس کو پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت بحال کیا جائے کیونکہ ملک میں 90لاکھ ٹن سالانہ اسٹیل کی ڈیمانڈ ہے

یہ بھی پڑھیں : فضل الرحمن آ کسیجن لے کر پہنچ گئے‘فواد چوہدری

جس میں ہرسال 15فیصد کی شرح سے اضافہ ہورہا ہے ، انہوں نے کہا کہ بحالی پر 30کروڑ ڈالر سے 80کروڑ ڈالر تک لاگت ا?سکتی ہے جب کہ پاکستان اسٹیل ملز کی تباہی کے ذمہ داروں کے خلاف نیب اور ایف آئی اے کام کررہی ہے۔

(185 بار دیکھا گیا)

تبصرے