Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 19  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

تجاوزات کا جال … ٹریفک کا برا حال

ارشد انصاری جمعه 04 جنوری 2019
تجاوزات کا جال … ٹریفک کا برا حال

ہر ملک میں سفر ی سہو لیا ت کی فراہمی کے لیے حکو مت و نجی انتظا میہ کی جا نب سے ٹرا نسپو ر ٹ کے اسٹینڈ ز قا ئم کیے جا تے ہیں‘ جس کے با عث شہر کی ایک شہر سے دو سرے دو سرے آ مد رو فت کے سلسلے میں ٹرا نسپو ر ٹ کا ا ستعمال کر تے ہیں اور مو جو دہ دو ر میں بھی پا کستان کے شہر و ں ا سلام آ باد‘کر اچی ‘کو ئٹہ‘ لاہو ر سمیت حیدر آباد میںبھی و ین ٹر مینل قا ئم کیا گیا تھا‘ لیکن و ہا ں سفر ی و دیگر بنیا دی سہو لیا ت پر قائم کیا گیا تھا ‘لیکن سفر ی و دیگر بنیا دی سہولیا ت کی فرا ہمی کو حکو متی متعلقہ ادا رو ں کی جا نب سے لا پر واہی بے قاعد گیو ں اور بد انتظا می کے با عث مذ کو رہ بس ٹر مینل سے ٹرا نسپو ر ٹ کی سہو لیا ت حیدر آباد کے شہر یو ں کو ابھی تک حا صل نہیں ہو ئی ہے جس کے بڑی و جہ یہاں کے بعض مقا می ٹرا نسپور ٹرز کی ا جا رہ دا ری اور متعلقہ سر کا ری ادا رو ں کے راشی افسران و عملے کی جانب سے ر شو ت ستانی جبکہ بڑے پیما نے پر کر پشن کے با عث مذکورہ بس وو ین ٹر مینل کو فنکشنل ہی نہیں کیاجا سکا ہے‘ جبکہ سابق گز شتہ کچھ عر صے قبل حیدر آباد کے ڈپٹی۔کمشنر ز کی جا نب سے کئی مر تبہ حیدرآبادو لطیف آباد اور قا سم آ باداور بدین بس اسٹینڈز میں قا ئم نجی ٹرا نسپو ر ٹر ز کے خلا ف کا ر وائیا ں کی گئی تھی اور مقا می ٹا نسپو ر ٹر ز کی جا نب سے ہٹڑی بائی پا س کے مقام پر بس وو ین ٹر مینل پر اپنے ٹرانسپورٹ کے اسٹینڈ ز کو منتقل کر نے کی ضلعی انتظامیہ کو یقین دہانی کر ائی تھی تھی تا ہم ابھی تک حیدر آباد میں قائم بس وین ٹرا مینل اور دیگر ٹر ا نسپو ر ٹ کے اسٹینڈ ز کو بند نہیں کیا گیا ہے اور نہ ہی ہٹٹری با ئی پاس کے مقا م پر حکو متی ادا رو ںکی جا نب سے قا ئم کیے جانے والے بس ٹر مینل پر اپنی ٹرا نسپو ر ٹ کو منتقل نہیں کیا ہے‘ حیدر آباد اور آٹو بھان رو ڈ سے متصل لطیف آباد کے ٹر یفک سیکشن کے عین سامنے قا ئم نجی ٹرانسپو ر ٹر ز کے بس وین ٹر مینل کو قا ئم کر کے یہا ں سے غیر قا نونی طورپر بسیں وین کا ر و ں کے اسٹینڈ ز کے ز ر یعے اپنے غیر قا نونی عمل کے ذ ر یعے اور ٹریفک اہلکا رو ں سمیت پو لیس انتظا میہ کے راشی افسران واہلکا رو ںکو کر پشن میں ملو ث کر کے غیر قانونی ا سٹینڈ ز قا ئم کیے ہوئے ہیں جبکہ لبر ٹی چو ک پر قا ئم وین ا سٹینڈ ز اور سول ا سپتال حیدر آباد کچی د یو ار کے ساتھ‘یہا ں سے کر اچی نو اب شاہ سمیت دیگر شہروں کے لیے ٹرا نسپو ر ٹ چلا ئی جا رہی ہے اور اس طر ح پٹھان کا لو نی میں بعض پو لیس کے ر یٹا ئر ڈ افسران واہلکا رو ں اور دیگر اہم شخصیا ت کی ایما ء پر ٹریفک پو لیس آرٹی اے کے عملے کی ملی بھگت کے ذریعے یہا ں کر اچی و دیگر شہر و ں سے بھی ٹرا نسپو رٹ چلا ئی جار ہی ہے اور تو اور سی آئی اے سینٹر حیدر آباد اور بلد یہ تھانے و پنیا ری تھا نے کی حد ود میں بھی غیر قانونی ٹرا نسپو ر ٹر ز کی جا نب سے چلا ئی جا رہی ہے ‘جبکہ ہیر آ با د کے علا قے جیل رو ڈ اور دیگر قر یبی علا قو ں میں قائم نجی ٹرا نسپو ر ٹر ز کی جا نب سے بھی غیر قا نونی اسٹینڈ ز قا ئم کرکے ما ہانہ پو لیس انتظامیہ‘ جبکہ مقا می تھانید ا رو ں کو ایک کر و ڑ روپے کی رشو ت و بھتے مقامی بعض ٹرا نسپو ر ٹر ز کی جانب سے با قا عد گی سے ادائیگی کر نے کے اہم انکشا فا ت ہو ئے ہیں ز را ئع نے بتایاکہ لطیف آباد کے ٹر یفک سیکشن کی چوکی کے سامنے لطیف آباد میں قا ئم غیر قانونی طر یقے سے شہریو ں کو سفر ی سہو لیا ت کے نام پر کر اچی فی کس کرایہ 400روپے تک و صول کیا جا ر ہا ہے اس طرح بعض۔بسو ں وو ین اسٹینڈ ز سے بھی زائد کر ایہ و صول کیے جا نے کی شکا یا ت بھی عام ہیں اور ان غیر قا نونی بسو ں ووین اسٹینڈ ز کے قائم کیے جانے کے خلاف مو جو دہ دو ر میں متعلقہ آ ر ٹی اے اور ٹریفک انتظا میہ جبکہ مقا می تھانید ا رو ںکی خا مو ش لمہ فکر یہ ہے ؟ جس کی نا ک کے نیچے غیر قا نو نی بسو ں و ینو ں سے مقامی ٹرا نسپو ر ٹر ز حکو مت یاادا رو ںکو ٹیکس کی ادائیگی کے بغیر ہی اپنے کا ر و با رکو تقو یت دیئے ہوئے ہیں دیکھنا یہ کہ اگرمتعلقہ ادا رو ںکی جا نب سے غیر قا نونی بسو ں کو چز اور و ین سمیت کا ر و ں کے اسٹینڈز کی انتظا میہ کے خلا ف کا رر وائی کی جا تی تو ماہانہ لا کھو ں روپے کی ر قم حکومتی ادا روں کو حا صل ہوتی لیکن ایسا نہیں ہو ر ہا ہے بلکہ ہٹڑی بائی پا س پر قائم کیے جانے والے بس و وین ٹر مینل کی تعمیر ات میں بھی گھپلے کیے جانے کے انکشا فا ت بھی سامنے آ ر ہے ہیں،۔ذ را ئع کی جا نب سے بتا یا جاتاہے کہ مو جو دہ ڈپٹی کمشنر حیدر آباد کی جا نب سے بھی مقامی ٹرانسپورٹر ز کو ہٹٹر ی بائی پا س کے مقام پر قائم بسو ں و کو چز اور و ین سمیت کا ر و ںکے ا سٹینڈ ز کو منتقل کر نے کے ا حکا ما ت بھی دیئے گئے ہیں لیکن لطیف آباد کے ٹر یفک سیکشن کے عین سامنے قا ئم وین اور کاروںکے ا سٹینڈ کو منتقل کرنے کا تہیہ دیگر ٹر انسپو ر ٹر کی طرح کیا ہو اہے جس کے با عث ان غیر قا نونی ٹرانسپو ر ٹ کے ا سٹینڈ ز شہر ی علا قوں میں قائم ہونے سے ٹر یفک کے جام رہنے کا مسئلہ بھی طو ل پکڑ تا جا ر ہا ہے شہر ی اور علاقا ئی تنظیموں اور مقامی شہر یو ں کی جانب سے حیدر آ باد میں ٹر یفک کے جام رہنے کی بڑی و جہ ان غیر قا نونی ٹرانسپو ر ٹر ز کے ا سٹینڈ ز بتا ئے گئے ہیں شہر یو ں کا مطا لبہ بھی کا فی عر صے ر ہا ہے کہ ان غیر قا نونی بسو ں وین اور کو چز سمیت کا رو ںکے اسٹینڈ ز کو شہر سے با ہر منتقل کیا جا ئے د یکھنا یہ ہے کہ مو جو دہ ضلعی انتظا میہ حیدر آباد شہر سے ٹر انسپو رٹ کے غیر قا نو نی ا سٹینڈ کو اب تک ہٹٹر ی با ئی پا س کے مقا م پر منتقل کر ا کر شہر یو ں کو ٹر یفک کی بہتر سہو لیا ت کی فراہمی کو یقینی بنا تے ہوئے حیدر آ باد سے ٹر یفک کے جام رہنے کے مسئلے سے بھی نجا ت د لو اتی ہے۔

(218 بار دیکھا گیا)

تبصرے