Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 19  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

سی این جی بند‘ پبلک ٹرانسپورٹ کا پہیہ جام

رائو عمران اشفاق بدھ 12 دسمبر 2018
سی این جی بند‘ پبلک ٹرانسپورٹ کا پہیہ جام

کراچی ۔۔۔۔۔۔۔ سندھ میں غیر معینہ مدت کے لئے سی این جی اسٹیشن بند ہونے کے باعث  سی این جی بند ہونے سے شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ سڑکوں سے غائب ہے جبکہ اسکول وین بھی غائب ہونے سے ہزاروں طلباء تعلیمی اداروں میں نہیں پہنچ سکے‘ مختلف علاقوں میں گیس کی لوڈشیڈنگ کے باعث گھریلو صارفین کو بھی شدید مشکلات کا سامنا‘ سینکڑوں کارخانے بند ہونے سے ہزاورں افراد بے روزگار ہوگئے‘ سی این جی کی بندش کے باعث شہری نظام زندگی درہم برہم ہوگیا‘ تاجر آج سوئی سدرن گیس آفس کا گھیرائو کریں گے‘ گیس کی بندش سے شہر میں بجلی اور پانی کے بحران کا خدشہ بھی ہوگیا۔ اطلاعات کے مطابق ٹنڈو جام اور گمبٹ گیس فیلڈ میں فنی خرابی کے باعث گیس کا شدید بحران ہوگیا ہے۔ گھریلو صارفین کو گیس کی فراہمی جاری رکھنے کے لئے سندھ بھر میں سی این جی اسٹیشن غیر معینہ مدت کے لئے بند کردیئے گئے۔ آج تیسرے روز بھی سی این جی اسٹیشن بند ہونے سے شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ کی شدید قلت کے باعث شہری نظام زندگی درہم برہم ہوگئے۔ بس اسٹاپوں پر مسافروں کا رش ہے‘ منی بسوں اور کوچوں کی چھتوں اور کھڑکیوں پر لٹک کر مسافر سفر کررہے تھے۔ پرائیویٹ ایسوسی ایشن کے مطابق شہر میں 90 فیصد پبلک ٹرانسپورٹ بند ہے۔ ایسوسی ایشن کے مطابق ٹرانسپورٹ بھی غیر معینہ مدت کے لئے بند ہوگئی‘ عوام متبادل ٹرانسپورٹ کا انتظام کرلیں۔ جبکہ رکشے اور ٹیکسی والے مسافروں سے منہ مانگے کرائے وصول کررہے تھے۔ آج صبح مختلف علاقوں میں اسکول وین ڈرائیورز بھی اسکول کے بچوں کو لینے نہیں پہنچ سکے جس کے باعث سینکڑوں طلباء وطالبات اسکول اور کالجز نہیں پہنچ سکے۔ گیس کی قلت کے باعث کے الیکٹرک کے بجلی گھر بھی بند ہونے سے شہر میں بجلی کا شدید بحران کا خدشہ ہوگیا ہے۔ بجلی بند ہونے سے واٹر بورڈ کے پمپنگ اسٹیشن بند ہوجائیں گے جس سے شہر کا پانی بھی بند ہوجائے گا۔ کیپٹو پاور پلانٹ بند ہونے سے شہر کے بڑے ایکسپورٹ کے کارخانے بند ہوگئے ہیں جس سے ہزاروں مزدور بے روزگار ہوگئے ہیں‘ ان کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہوگئے ہیں۔ کراچی چیمبر آف کامرس انڈسٹری نے بھی گیس بندش کی مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ 2 روز پہلے وزیراعظم نے کراچی میں ملاقات میں یقین دہانی کروائی تھی۔ ایس ایس جی سی صنعتوں اور کیپٹو پاور پلانٹس کی بجلی منقطع نہیں کرے گی۔ وزیراعظم کی یقین دہانی کے باوجود ایس ایس جی سی نے 3 ماہ کے لئے گیس بندش کا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔ سی این جی ڈیلرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عبدالسمیع خان کے مطابق سی این جی کی غیر معینہ مدت کی بندش کے خلاف آج حسن اسکوائر پر ایس ایس جی سی ہیڈ آفس کے سامنے تاجر احتجاج کریں گے‘ اہم مسئلے پر حکومت کی خاموشی معنی خیز ہے۔ سندھ کی گیس کسی اور کو کیوں دی جارہی ہے۔ ترجمان ایس ایس جی سی کے مطابق مختلف گیس فیلڈز کی فنی خرابی کی وجہ سے ایس ایس جی سی کو مطلوبہ گیس کی مقدار میسر نہیں ہورہی ہے‘ اس کے ساتھ کوئٹہ اور اندرون سندھ میں سردی بڑھنے کے سبب گیس پریشر میں غیرمتوقع کمی ہوگئی ہے جس کے سبب گھریلو صارفین کو گیس کی سپلائی جاری رکھنے میں دشواری کا سامنا ہے۔ شہر کے متعدد علاقوں میں گیس کی بندش اور گیس پریشر میں کمی سے گھریلو صارفین کو بھی مشکلات کا سامنا ہے۔ دریں اثناء مشیر اطلاعات سندھ مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ وفاق کی جانب سے گیس کی بندش سمجھ سے بالاتر ہے۔ انہوں نے کہا کہ صوبے سے ملنے والے قدرتی وسائل صوبے کا حق ہیں‘ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت عوام کو بنیادی سہولیاتیں دینے میں ناکام رہی ہے۔

(402 بار دیکھا گیا)

تبصرے