Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 19  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

آمنہ شیخ بدھ 14 نومبر 2018

اردو شاعری میں چاند سے روشن چہرے کی ہی نہیں بلکہ عمدہ جلد کی بھی خوب تعریف کی گئی ہے اور کیوں نہ کی جائے جبکہ یہ دوسروں پر براہ راست اثر ڈالتی ہے- روزمرہ غذا سے لے کر سونے اور بیدار ہونے کے معمولات بھی انسانی جلد پر اثرات مرتب کرتے ہیں – حتی کہ دل کے اندر پنپنے والے بغض اور کینا کو بھی سیاہی کی شکل میں محسوس کیا گیا ہے۔ اسی پر موقوف نہیں بلکہ جسم کا وہ حصہ جو کھلا رہتا ہے اور موسم کے سردو گرم کو زیادہ برداشت کرتا ہے ڈھکے ہوئے حصے کے مقابلے میں زیادہ بھدا محسوس کیا گیا ہے۔ نارمل جلد نہ تو زیادہ چکنی ہوتی ہے اور نہ ہی زیادہ خشک خشک جلد کھردری اور بے رونق ہوتی ہے- اس کی لیئر موٹی، چہرہ کے مسامات کھلے ہوئے اور چہرے پر لکیریں ہوتی ہے ایسی جلد پر جھریاں جلدی آ جاتی ہیں – چکنی جلد زیادہ تر لوگ پسند نہیں کرتے جبکہ حقیقتا یہ آئیڈیل جلد ہوتی ہے- وجہ صاف ہے کہ ایسی جلد میں جھریاں بہت عرصے بعد پڑنی شروع ہوتی ہیں – یہ الگ بات ہے کہ جلد پر چکنائی ہونے کی وجہ سے بار بار چہرہ دھونے کی ضرورت پڑتی ہے – چکنی جلد کے مسامات کھلے ہوئے ہوتے ہیں اور جلد کا خیال نہ رکھنے پراس میں بلیک ہیڈز اور دانے بھی ہو جاتے ہیں – جلد اگر کہیں سے خشک اور کہیں سے چکنی ہو یعنی پیشانی اور ناک والا حصہ چکنا جبکہ بقیہ حصہ خشک ہو تو ایسی جلد کو کمبی نیشن یا ملی جلی کیفیت والی جلد کہا جائیگا- چہرے کی ساخت کی شناخت کے بعد ان مسائل کی طرف آتے ہیں جو چہرے کی خوبصورتی متاثر کرتے ہیں – بعض خواتین ہی نہیں بلکہ مرد حضرات کو بھی بلیک ہیڈز کی شکایت ہوتی ہے- خواہ یہ ناک پر ہوں یا ہونٹوں کے اطراف میں، یہ چہرے کی خوبصورتی کو بری طرح متاثر کرتے ہیں- ان بلیک ہیڈوں سے چہرے کی چمک ختم ہو جاتی ہے- خصوصا سورج کی روشنی میں یہ چہرے پر نمایاں ہو جاتے ہیں- ویسے بھی یہ ایک طرح کے Dust کی طرح ہوتے ہیں یہ بلیک ہیڈ مسامات بند کر دیتے ہیں – ان سے نجات حاصل کرنے کے چند آزمودہ طریقے درج ذیل ہیں – تھوڑا سا وقت نکال کر ان ٹوٹکوں پر عمل کر کے ان بلیک ہیڈز سے نجات پائی جا سکتی ہے اور نرم و ملائم جلد کا خواب پورا کیا جا سکتا ہے:
* اگر آپ کی جلد چکنی ہے تو صبح اٹھ کر آئینے کے سامنے جا کر کاٹن یا ٹشو کو گیلا کریں – اگر گرم پانی میں گیلا کریں تو زیادہ بہتر ہے- پھر اس سے بلیک ہیڈز صاف کر لیں ، یہ آسان حال ہے-
*تھوڑے سے کارن فلور میں انڈے کی سفیدی مکس کر کے پیسٹ بنائیں اوراسے بلیک ہیڈز کی جگہ پر لگائیں – خشک ہونے کے بعد چہرے دھولیں – جلد چمک اٹھے گی-
*کھانے کا سوڈا عرق گلاب میں مکس کر کے ناک پر لگا لیں اور انگلیوں کے پوروں سے ہلکے ہلکے مساج کریں اور پانچ منٹ بعد دھولیں – متاثرہ جگہ چمک اٹھے گی-
*چہرہ دھونے کے بعد ٹونر ضرور استعمال کریں – اس کیلئے عرق گلاب بھی بہتر رہے گا اس کا اسپرے استعمال کریں –
*چہرہ دھونے کے بعد چہرے کے مزاج کے مطابق موئیسچرائزر استعمال کریں – چکنی جلد کے لئے آئل کنٹرول موئیسچرائزر جب کہ خشک جلد کیلئے ڈرائی موئیسچرائز استعمال کریں –
*چہرے پر دانے ہوں تو بھاپ لینا نقصان دہ ثابت ہوتا ہے بھاپ کی بجائے نیم گرم پانی میں صاف روئی بھگو کر چہرے پر لگائیں اور دانوں اور بند مسامات کو بھی اس سے پونچھ لیں – اس طرح فیشل کے دوران بھاپ لینے کا مقصد پورا ہو جائیگا-
*فیشل کے دوران ماسک صاف کرنے کے لیے اسفنج کا استعمال بالکل نہ کریں یہ چہرے کیلئے مضر ہوتا ہے- اسفنج کے چھوٹے چھوٹے پورسس میں بیٹھی ہوئی خفیف دھول آپ کے چہرے کو نقصان پہنچا سکتی ہے جو چہرے پر دانوں کا سبب بنتی ہے- اسفنج کی جگہ کاٹن یعنی روئی کا استعمال کریں –

(205 بار دیکھا گیا)

تبصرے