Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 19 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

غیر قانونی فوڈ اسٹریٹ کیخلاف بھی گرینڈ آپریشن کیا جائے گا‘وسیم اختر

صابر علی پیر 12 نومبر 2018
غیر قانونی فوڈ اسٹریٹ کیخلاف بھی گرینڈ آپریشن کیا جائے گا‘وسیم اختر

کراچی بلدیہ عظمیٰ کراچی نے تجاوزات کے خلاف آپریشن میں 1000سے زائدناجائز دکانیں مسمار کردیں ‘ صدرایمپریس مارکیٹ اور اس کے اطراف سمیت طارق روڈ ‘ خالد بن ولید روڈ اور دیگر علاقوں میں اتوار کے روز بھی تجاوزات کے خلاف آپریشن جاری رہا‘ میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ شہر میں قائم غیر قانونی فوڈ اسٹریٹ کے خلاف گرینڈ آپریشن کیا جائے گا‘ میئر کراچی نے کہا کہ تجاوزات کے خلاف آپریشن کے کوئی سیاسی مقاصد نہیں ہیں‘ اس حوالے سے کسی قسم کا کوئی دبائوبرداشت نہیں کیا جائے‘ اتوار کے روزصدر ایمپریس مارکیٹ کے باہر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ایمپریس مارکیٹ کی ایک تاریخی حیثیت ہے‘ بلدیہ عظمیٰ کراچی کی اس تاریخی اہمیت کے پیش نظر تاریخی حیثیت کی بحالی کے لیے ہر ممکن اقدامات کرے گی‘ ایمپریس مارکیٹ کے چاروں کونوں پر خوبصورت پارک تعمیر کئے جائیں گے‘ ماضی میں ان پارکوں کی جگہ دکانیں تعمیر کردی گئی تھیں‘ انہوںنے کہا کہ سابقہ افسران نے ان دکانوں کی لیز غلط دی تھی‘ ضروری نہیں کہ ان غلطیوں پر قائم رہا جائے‘ غلطیوں کو درست کرنے کا وقت ہے ‘ سپریم کورٹ کی ہدایت پر بلدیہ عظمیٰ کراچی نے ضلعی انتظامیہ اور دیگر متعلقہ اداروں کے تعاون سے شہر میں تجاوزات کے خلاف سب سے بڑااور مشکل کام شروع کردیا ہے ‘ جو انشاء اللہ جلد مکمل ہوگا ‘ پہلے مرحلے میں صدر سے تجاوزات کو مکمل طورپر صاف کرکے شہر کے مرکز میں تاریخی عمارت ایمپریس مارکیٹ کو اصل شکل سے بحال کردیاگیاہے ‘ میئر کراچی نے کہا کہ صدر ایمپریس مارکیٹ کی طرح شہر کے دیگر علاقوں خصوصاً لیاقت آباد ‘ناظم آباد اور جہاں جہاں بھی تجاوزات ہیں ان کو ختم کیا جائے گا‘ انہوںنے قابضین سے کہا کہ وہ نقصان سے بچنے کے لیے از خود جگہ خالی کردیں‘ سپریم کورٹ کے احکامات پر عمل درآمد ریاستی اداروں کی ذمہ داری ہے ‘ میئر کراچی نے کہا کہ انہیں وزیر اعظم عمران خان کی مکمل حمایت ہے ‘ وزیر اعظم نے مجھے ہدایت کی ہے کہ کراچی میں تجاوزات کے خلاف کارروائی کی جائے اور شہر کو تجاوزات سے پاک کیاجائے‘ تجاوزات کے خلاف کارروائی میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سیف الرحمن کی نگرانی میں کی جارہی ہے‘ جس میں تمام ادارے تعاون کررہے ہیں‘ خود دکانداروں نے بھی تعاون کیا ہے ‘ جس پر ان کا شکریہ ادا کرتا ہوںاور یقین دلاتا ہوں کہ جس کا جو حق ہے ‘ وہ اس کو متبادل کے طورپر دیا جائے گا۔

(310 بار دیکھا گیا)

تبصرے